بس ایک ماں ہے جو مُجھ سے خفا نہیں ہوتی


ماں کس قدر خوبصورت لفظ ہے کے جب لبوں سے ادا ہوتا ہے تو ہونٹ بے ساختہ ایک دوسرے کو چوم لیتے ہیں مُحمد(ص) کے م کی میٹھاس لیے ہوئے یہ لفظ ہر درد کی دوا بن جاتا ہے الله کو جب حاجت ہوئی کے وہ اپنے بندوں سے اپنی مُحبت کی پہچان کروائے تو وہ خُدا جو بے مثال ہے اُس نے ماں کی اپنی اولاد سے مُحبت کی مثال بیان کی کہ میں اپنے بندوں سے ستر ماوّں سے زیادہ مُحبت کرتا ہوں

دنیا کے ہر بچے کے لیے اُس کی ماں سب سے زیادہ خاص ہوتی ہے میرے لیے بھی ہے میری ماں کی آنکھیں وہ آینہ ہیں جن میں دیکھ کر مُجھے یقین ہوتا ہے کے میں دُنیا کی سب سے خوبصورت لڑکی ہوں میرے ماتھے پر میری ماں کے لبوں کا لمس میرے جسم کی ہی نہیں میری روح کی بھی تمام تھکن سمیٹ لیتا ہے اور جب وہ مُجھے پیار سے دیکھتیں ہیں تو پوری دُنیا میں اس سے حسین منظر کوئی نہیں ہوتا –

میری ماں میرے سر پر تنا ہوا آسمان ہے وہ زمین ہے کہ جو میرے پاوّں کو مظبوطی سے جمائے ہوئے ہے ، وہ سورج ہے جس سے میرا بدن حرارت لیتا ہے یا وہ چاند ہی جو کالی اندھیری رات میں مُجھے اپنی چاندنی سے روشن کرتا ہے میری ماں وہ ستارا ہے جو مُجھے منزل کا پتہ دیتا ہے وہ بادل ہے جو مُجھ پر رحمت برساتا ہے بارش کی وہ پہلی بوند یے جو میری روح کو بھی پیاس بُجھا دیتی ہے وہ سمندر ہے جو اپنے سینے میں میراہر غم ہر دبکھ ہر راز دفن کر لیتی ہے وہ گھنا درخت ہے جو دھوپ میں میرے وجود کہ اپنی ٹھنڈی چھاوًّں بھر لیتا ہے وپ پھول ہے جو میری ذات کو مہکاتا ہے وہ ڈھرکن ہے جو میرے سینے میں دل ہونے کا احساس بن کے ڈھرکتی ہے

میری ماں سانسّوں کی وہ ڈور ہے جو مجھے زندہ ہونے کا یقین دلاتی ہے وہ میری چاہت میرا جنون میری عبادت میری ریاضت میری دُعا میرا ایمان میری کُل کاینات ہے میری ماں وہ ہستی ہے جو مُجھے دیکھ کر مُسکراتی ہے جو میری آنسوں خُد رو لیتی ہے ماؤں کے لیے کوئی ایک دن نہں ہوتا ہر دن ماں کادن ہے ہر رات ماں کی رات ہے مگر رسمِ دنیا کے لیے ہم کیا بُری بُری باتیتں نہیں اپناتے تو آج کا ایک دن اگر ماں جیسی ہستی کے لیے مخصوص کیا ہے لوگوں نے تو اس رسم کہ لے کر چلتے ہوئے آج کے دن میں ہر ماں کو سلام پیش کرتے ہیں

سلام دُنیا کی مادر اول جناب۔ حوا (ع) کو جن سے نسلِ آدم چلی ۔سلام جنابِ آسیہ (ع) پر جن کی آغوش میں پل کے مُوسی(ع) جوان ہوئے ، سلام جناب۔ حاجرہ (ع) پر جن کے بیٹے ایسے فرمابردار ہوے کے اُن کے والد کو بھی اُن پر ناز ہوا ،سلام دبنا کی سب سے خوش نصیب ماں جنابِ آمنہ (ع) پرجہوں نے تمام جہانوں کے لیےرحمت بننے والے بیٹے کو جنم دیا سلام بی بی حلیمہ (ر) پر کے جن کو گود میں مُحمد(ص) کیھلے
سلام جنابِ فاطمہ بنتِ اسد (ع) پر کے جن کو شرف حاصل ہے مولائے کاینات کو پیدا کرنے کا ، بیٹا بھی ایسا کے جب وفات کے بعد دفن کیا گیا تو جنابِ رسولِ خُدا (ص) دوسری قبر میں لیٹ گیے اور جنابِ فاطمہ بنتِ اسد ( ع) کا ہاتھ تھام لیا جب فرشتے آئے اور سوال کیا کے باتیں آپ کا امام کوں ہے تو آپ ہچکچا رہیں تھیں تب رسول ِ خُدا (ص) نے فرمائا کے شرماہیں نہیں اور کہہ دیجے کے آپ کا بیٹا ہی آپ کا امام ہے (سبحان الله)-

اور سلام جنابِ خدیجہ (ع) پر کے جنہوں نے دُنیا کی سب سے بہترین بیٹی کو سب سے افضل ترین بیوی کو سب سے کامل ماں کو جنم دیا وہ بیٹی جو تمام جہانوں کے لیے رحمت بننے والے نبی(ص) کے لیے باعثِ رحمت بنیں اور جن کو دُنیا اور آخرت کی ہر خاتون پر فضیلت حاصل ہے ، اور سلام بار دیگر سلام بر حضرت فاطمہ زہراء سلام الله علیها پر جو وجہ ِ کاینات میں سے ایک ہیں جنابِ فاطمہ زہراء سلام الله علیها وہ ماں ہیں کے جن کے بیٹے کے خون کے صدقے آج دُنیا میں ہر کلمہ ِتوحید زندہ و جاوید ہے

میرے لاکھوں جنابِ زینب سلام الله علیها پر وہ ماں جس نے اپنے بچے دین اور بھائی پر نثار کردیے وہ ماں جو اپنے بچوں کو کبھی نا روہیں ، سلام مادرِ عباس(ع) پر جنہوں نے عباس(ع) جسی شیر کو جنم دیا
سلام آماں فضا (ع) پر جن کو چار اماموں نے ماں کہا، سلام مادرِ حُر پر کے جنہوں نے وہ بیٹا پیدا کیا جس نے اپنی جان فاطمہ (ع) کے دل کے چین اور علی مولا(ع) کے آنکھوں کے نور پر نیچھاور کر دی سلام ہر اُس ماں کو جس نے راہ ِ حق کے لیے اپنے جگر کے ٹُکڑون کو قربان کر دیا اُن ماوّن کو سلام جوآج ہم میں نہیں خاص کر میری نانی آماں ، اور جنابِ فاطمہ زہراء سلام الله علیها کے قدموں کی دھول اور اُن کی کنیز میری ماں پر جو میری جنت ہے

الله کے حضور میری ایک ہی دُعا ہے کے خاتونِ جنت بی بی فاطمہ زہراء سلام الله علیها کے پیروں کا صدقہ ہو بچے کے سر پر اُس کی ماں کا سایہ ہمیشہ قایم رہے(الہی آمین)

اُس کے ہونٹوں پر کبھی بد دُعا نہیں ہوتی
بس ایک ماں ہے جو مُجھ سے خفا نہیں ہوتی

Advertisements
By sumerasblog Posted in family

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s