کروں تو کس لیے آخر ملال اُس کا


کروں تو کس لیے آخر ملال اُس کا
اُسے نہیں تو مجھے بھی نہیں خیال اُس کا
میری وفا نے بنایا ہے بے وفا اُس کو
کسی ادا پر نہیں ہے کمال اُس کا
میرے نصیب کے یہ بھی تو خوش نصیبی ہے
مُجھہ کو دیکھ کر سب پوچھتے ہیں حال اُس کا
میرے عروج کو اُس کے نصیب میں لِکھ دے
خدائے پاک مجھے سونپ دے زوال اُس کا

Advertisements
By sumerasblog Posted in poetry

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s